The Call of Revolution (A Collection of Speeches)

فہرست

عنوانات

٭ پیش لفظ

باب اَوّل : خطاب عوامی استقبال (23 دسمبر 2012ء، مینارِ پاکستان)

1۔ اِبتدائیہ

  • پہلا حلف : آج کا پروگرام کسی خارجی یا داخلی ایجنسی کا ایجنڈا نہیں
  • دوسرا حلف : آج کے پروگرام کے لیے مالی معاونت تحریکی کارکنان نے کی ہے
  • تیسرا حلف : اِس عوامی اجتماع کا مقصد فوجی اقتدار لانا یا سیاسی بساط کو لپیٹنا نہیں
  • شرکاء اجتماع کا حلف

2۔ آج کے اجتماع کے وسائل

3۔ مقصدِ اجتماع - استقبال یا حقیقی تبدیلی؟

4۔ پُراَمن جد و جہد کا آغاز

5۔ دنیا کے سامنے پُرعزم کارکنان کے ولولوں کا اِظہار

6۔ ہر فرد کی معاشرتی عزتِ نفس کی بحالی

7۔ عدلیہ کی آزادی و خودمختاری کی حمایت

8۔ وطنِ پاکستان کے ساتھ وفاداری کا اِظہار

9۔ انتہا پسند طبقات کو ملکی فلاح و بہبود میں شامل ہونے کی دعوت

10۔ دہشت گردی و کرپشن کے خلاف اعلانِ جنگ

11۔ آمریت نہیں … سیاستِ محمدی

  • اُصولوں پر مبنی سیاست
  • کیا یہ سیاست ہے؟
  • نعرہ ’سیاست نہیں… ریاست بچاؤ‘ سے مراد

12۔ ایجنڈا انتخابات رکوانا نہیں بلکہ انہیں درست کروانا ہے

  • قانون کی بالادستی کا فقدان
  • کرپشن اور بددیانتی کی انتہا
  • ملک کے غریب و مزدور کی حالتِ زار
  • فوج کی مداخلت روکنے کا طریقہ

13۔ آئین پاکستان کیسے انتخابات چاہتا ہے؟

  1. انتخابات میں اِستحصال کا خاتمہ
  2. اُمیدوار اور سپورٹرز کی جان کی حفاظت
  3. معاشرتی انصاف کی دستیابی اور برائیوں کا خاتمہ
  4. لوگوں کا معیارِ زندگی بہتر کرنے کی ضمانت
  5. کمزور و طاقتور کے مابین توازن فراہم کرنے کی ضمانت
  6. بنیادی ضروریاتِ زندگی مہیا کرنے کی ضمانت
  7. ذرائع آمدنی اور وسائل میں غیر معمولی فرق کا خاتمہ
  8. ووٹرز کی آزادیِ رائے کا تحفظ

14۔ الیکشن کے لئے آئین کی شرائط

15۔ عدالتی فیصلہ اور حکومت کا آئینی جواز

16۔ انتخابات اور ریاستی اداروں کی جانبداری

17۔ حکومتی سطح پر کرپشن کا اعتراف

  • ٹیکس چور ممبران پارلیمنٹ
  • جعلی ڈگریوں کے حامل اراکین پارلیمنٹ

18۔ آئینِ پاکستان کے مطابق ممبر پارلیمنٹ کی شرائط

19۔ حقیقی جمہوریت

20۔ ہم کیسا نظام چاہتے ہیں؟

21۔ انتخابی اصلاحات کی ناگزیریت

22۔ اعلانِ ’لانگ مارچ‘

باب دوم : اسلام آباد لانگ مارچ اور دھرنے کے شرکاء سے خطابات (13 تا 17 جنوری 2013ء)

1۔ عظیم الشان تاریخی لانگ مارچ پر مبارک باد

2۔ انقلابی کارکنوں کو پر امن رہنے کی ہدایات

3۔ جمہوری اُصولوں کے مطابق پر امن لانگ مارچ

4۔ ہماری جد و جہد کسی خاص شخصیت کے خلاف نہیں

5۔ ہم پر امن انقلاب کے داعی ہیں

6۔ آئین کے تحت قیامِ امن ریاست کی ذمہ داری ہے

7۔ حکمران عوام کو اور باہر کی دنیا کو امن دینے سے قاصر ہیں

8۔ آئین کی رُو سے معیارِ قیادت

9۔ ارکانِ اسمبلی اور آئین کی پامالی

10۔ عوام کے حقوق سے حکمرانوں کی بے اعتنائی

11۔ سازشی اور بد دیانت امیدواروں کی کامیابی سے کبھی تبدیلی نہیں آئے گی

12۔ قانون شکن کو قانون سازی کا کوئی حق نہیں

  • قانون شکنوں کو پارلیمنٹ سے باہر کیوں رکھا جائے؟
  • لٹیروں کو ہم پاکستان کے ایوانِ اقتدار میں نہیں دیکھنا چاہتے

13۔ لانگ مارچ کے مطالبات

پہلا مطالبہ : انتخابی اصلاحات کا نفاذ

  • دوسرا مطالبہ : الیکشن کمیشن آف پاکستان کی تشکیلِ نو
  • تیسرا مطالبہ : نگران حکومتیں دو جماعتوں کے مک مکا سے نہیں ہوں گی
  • چوتھا مطالبہ : قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں کی تحلیل

14۔ انگلش خطاب

باب سوم : گوجرانوالہ، فیصل آباد، ملتان اور راولپنڈی کے عوامی اجتماعات سے خطابات

1۔ لانگ مارچ کا پس منظر

2۔ موجودہ سیاسی و جمہوری صورت حال

3۔ عوام کی حالتِ زار

4۔ غیر جمہوری رویوں کے حامل ’لیڈر‘

5۔ الیکشن کمیشن کی غیر آئینی تشکیل کے مکروہ مقاصد

6۔ قوم کو اعتماد دینے کی ضرورت ہے

7۔ دورِ جدید کے انقلابات

8۔ ایک نظام، مختلف چہرے

9۔ نگران حکومت کا قیام… ایک ڈرامہ

10۔ مہنگائی اور دہشت گردی کا گراف

11۔ مسائل و مشکلات کا حل

12۔ ریاست کے ستونوں کی کارکردگی

13۔ پاکستانی باصلاحیت قوم ہیں

14۔ غلطی کہاں ہوئی؟

15۔ تباہی کا ذمہ دار کون؟

16۔ آئین کی پاسداری

17۔ مسلم معاشرے کے خدوخال

18۔ پیغمبرانہ انقلاب کی راہ میں حائل رکاوٹیں

  1. حضرت نوح علیہ السلام
  2. حضرت شعیب علیہ السلام
  3. حضرت ھود علیہ السلام
  4. حضرت یوسف علیہ السلام
  5. حضرت موسیٰ علیہ السلام
  6. حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

19۔ میری جد و جُہد

20۔ میں کیسا پاکستان چاہتا ہوں!

21۔ ایسے پاکستان کے لیے کیسا نظامِ حکومت درکار ہے؟

22۔ یہ جدوجہد کب تک جاری رہے گی؟

Copyrights © 2019 Minhaj-ul-Quran International. All rights reserved