The Prophetic Conquests in the Post-resurrection Attributes

فہرست

1: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم فِي الْجَنَّةِ بِالْوَسِيْلَةِ وَالْفَضِيْلَةِ

{جنت میں مقامِ وسیلہ کا حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے لیے خاص ہونے کا بیان}

2: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم بِعَطَاءِ الْکَوْثَرِ

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کو کوثر عطا کیے جانے کی تخصیص کا بیان}

3: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم بِعَطَاءِ الْکَرَامَةِ وَمَفَاتِيْحِ الْجَنَّةِ

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کو خصوصی شرف و بزرگی اور جنت کی کنجیاں عطا کیے جانے کی تخصیص کا بیان}

4: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم بِالْبَعْثِ عَلَی الْمَقَامِ الْمَحْمُوْدِ يَوْمَ الْقِيَامَةِ

{روزِ قیامت حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کو مقامِ محمود پر فائز کیے جانے کی تخصیص کا بیان}

5: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم بِالشَّفَاعَةِ الْعُظْمٰی يَوْمَ الْقِيَامَةِ

{روزِ قیامت شفاعتِ عظمیٰ کا حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے لیے خاص ہونے کا بیان}

6: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم بِالْجُلُوْسِ عَلَی الْعَرْشِ عَنْ يَمِيْنِ الرَّحْمٰنِ

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کو عرش پر اﷲ تعالیٰ کی دائیں جانب بٹھائے جانے کا بیان}

7: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم بِکَوْنِه أَوَّلَ شَافِعٍ وَأَوَّلَ مُشَفَّعٍ

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے اوّل شافع اور مشفع ہونے کا بیان}

8: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم بِدُخُوْلِ سَبْعِيْنَ أَلْفًا مِنْ أُمَّتِهِ الْجَنَّةَ بِغَيْرِ حِسَابٍ

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی اُمت میں سے ستر ہزار اُمتیوں کا بغیر حساب و کتاب جنت میں داخل ہونے کا بیان}

9: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم بِرِجَالٍ مِنْ أُمَّتِه يَدْخُلُ مَعَ کُلِّ وَاحِدٍ مِنْهُمْ سَبْعُوْنَ أَلْفًا اَلْجَنَّةَ بِغَيْرِ حِسَابٍ

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی اُمت کے ستر ہزار اولیاء میں سے ہر ایک کے ساتھ ستر ہزار کے بغیر حساب و کتاب جنت میں داخل ہونے کا بیان}

10: بَابٌ فِي تَخْصِيْصِه صلی الله عليه واله وسلم بِکَوْنِ لِوَاءِ الْحَمْدِ بِيَدِه يَوْمَ الْقِيَامَةِ وَجَمِيْعِ الْأَنْبِيَاءِ تَحْتَ لِوَائِه

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے ہاتھ میں لواءِ حمد ہونے اور روزِ قیامت تمام انبیائِ کرام کا اُس جھنڈے تلے جمع ہونے کا بیان}

11: بَابٌ فِي کَوْنِه صلی الله عليه واله وسلم شَهِيْدًا عَلٰی جَمِيْعِ الْأَنْبِيَاءِ وَالْأُمَمِ

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کا تمام انبیاءِ کرام واُمتوں پر گواہ ہونے کا بیان}

12: بَابٌ فِي أَنَّ کُلَّ سَبَبٍ وَنَسَبٍ مُنْقَطِعٌ يَوْمَ الْقِيَامَةِ إِلَّا سَبَبُه صلی الله عليه واله وسلم وَنَسَبُه

{روزِ قیامت بھی حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے تعلق و نسب کے برقرار رہنے کا بیان}

13: بَابٌ فِي أَنَّه صلی الله عليه واله وسلم أَوَّلُ مَنْ يَنْشَقُّ عَنْهُ قَبْرُه وَيَخْرُجُ مِنْهُ يَوْمَ الْقِيَامَةِ وَحَوْلَه سَبْعُوْنَ أَلْفًا مِنَ الْمَـلَائِکَةِ

{روزِ محشر سب سے پہلے حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے لیے قبرِ انور شق ہونے اور آپ کا ستر ہزار ملائکہ کے جھرمٹ میں تشریف لانے کا بیان}

14: بَابٌ فِي أَنَّه لَنْ يُفْتَحَ بَابُ الْجَنَّةِ لِأَحَدٍ قَبْلَه صلی الله عليه واله وسلم وَهُوَ يَفْـتَـتِحُ بِه وَاسْتِقْبَالِ اﷲِ تَعَالٰی إِيَاهُ بِالْجَنَّةِ

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے لیے سب سے پہلے بابِ جنت کھولے جانا اور اللہ تعالیٰ کا جنت میں خود آپ کا استقبال فرمانا}

15: مصادر التخریج

Copyrights © 2019 Minhaj-ul-Quran International. All rights reserved