The Pure Pearls of the Prophetic Features

باب شانزدہم :حضور (ص) کے مبارک گھٹنوں اور پنڈلیوں کا بیان

بَابٌ فِي وَصْفِ رُکْبَتَيْهِ صلی الله عليه واله وسلم وَسَاقَيْهِ

{حضور صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے مبارک گھٹنوں اور پنڈلیوں کا بیان}

130 /1. عَنْ عَلِيٍّ رضی الله عنه قَالَ: کَانَ رَسُوْلُ اﷲِ صلی الله علیه واله وسلم ضَخْمَ الْکَرَادِيْسِ. رَوَاهُ التِّرْمِذِيُّ وَأَحْمَدُ وَأَبُوْ يَعْلٰی وَالْبُخَارِيُّ فِي الْکَبِيْرِ.

1: أخرجه الترمذي في السنن، کتاب المناقب، باب ما جاء في صفة النبي صلی الله عليه واله وسلم ، 5 /598، الرقم: 3637، وأحمد بن حنبل في المسند، 1 /96، 127، الرقم: 746، 1053، وأبو يعلی في المسند، 1 /304، الرقم: 370، والبزار في المسند، 2 /18، الرقم: 474، والحاکم في المستدرک، 2 /662، الرقم: 4194، والبخاري في التاريخ الکبير، 1 /8.

’’حضرت علی رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم بڑے مضبوط جوڑوں والے تھے۔‘‘

اِس حدیث کو امام ترمذی، احمد، ابو یعلی اور بخاری نے التاریخ الکبیر میں روایت کیا ہے۔

131 /2. عَنْ عَلِيٍّ رضی الله عنه قَالَ: کَانَ رَسُوْلُ اﷲِ صلی الله عليه واله وسلم جَلِيْلَ الْمُشَاشِ. رَوَاهُ التِّرْمِذِيُّ وَابْنُ أَبِي شَيْبَةَ.

2: أخرجه الترمذي في السنن، کتاب المناقب، باب ما جاء في صفة النبي صلی الله عليه واله وسلم ، 5 /599، الرقم: 3638، وأيضًا في الشمائل المحمدية /32، الرقم: 7، وابن أبي شيبة في المصنف، 6 /328، الرقم: 31805، والبيهقي في شعب الإيمان، 2 /149، الرقم: 1415، وابن سعد في الطبقات الکبری، 1 /411.

’’حضرت علی رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے جوڑوں کی ہڈیاں نمایاں تھیں۔‘‘ اِس حدیث کو امام ترمذی اور ابن ابی شیبہ نے روایت کیا ہے۔

132 /3. عَنْ أَبِي جُحَيْفَةَ رضی الله عنه قَالَ: دُفِعْتُ إِلَی النَّبِيِّ صلی الله عليه واله وسلم وَهُوَ بِالْأَبْطَحِ فِي قُبَّةٍ، وَکَانَ بِالْهَاجِرَةِ خَرَجَ بِــلَالٌ فَنَادَی بِالصَّلَاةِ، ثُمَّ دَخَلَ فَأَخْرَجَ فَضْلَ وَضُوْءِ رَسُوْلِ اﷲِ صلی الله عليه واله وسلم ، فَوَقَعَ النَّاسُ عَلَيْهِ يَأْخُذُوْنَ مِنْهُ، ثُمَّ دَخَلَ فَأَخْرَجَ الْعَنَزَةَ، وَخَرَجَ رَسُوْلُ اﷲِ صلی الله عليه واله وسلم کَأَنِّي أَنْظُرُ إِلٰی وَبِيْصِ سَاقَيْهِ. مُتَّفَقٌ عَلَيْهِ.

3: أخرجه البخاري في الصحيح، کتاب المناقب، باب صفة النبي صلی الله عليه واله وسلم ، 3 /1307، الرقم: 3373، ومسلم في الصحيح، کتاب الصلاة، باب سترة المصلي، 1 /360، الرقم: 503، والترمذي في السنن، کتاب الصلاة، باب ما جاء في إدخال الإصبع في الاذن عند الاذان، 1 /376، الرقم: 197، وأحمد بن حنبل في المسند، 4 /308، الرقم: 18781، وابن حبان في الصحيح، 6 /153، الرقم: 2394، وابن خزيمة في الصحيح، 4 /326، الرقم: 2995، وعبد الرزاق في المصنف، 1 /467، الرقم: 1806، والطبراني في المعجم الکبير، 22 /102، الرقم: 249.

’’حضرت ابو جحیفہ رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ میں اچانک حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی بارگاہ میں پیش کیا گیا جبکہ آپ ابطح میں ایک خیمے کے اندر جلوہ افروز تھے۔ دوپہر کے وقت حضرت بلال رضی اللہ عنہ باہر نکلے، اُنہوں نے نماز کے لیے اذان کہی پھر اندر چلے گئے اور حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے وضو سے بچا ہوا پانی لے کر باہر آئے تو لوگ اُسے (بطور تبرک) حاصل کرنے کے لیے ٹوٹ پڑے۔ اِس کے بعد حضرت بلال رضی اللہ عنہ اندر گئے اور نیزہ نکال لائے، پھر آپ صلی اللہ علیہ والہ وسلم باہر تشریف لائے، گویا میں آپ صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی مبارک پنڈلیوں کی سفیدی اب بھی دیکھ رہا ہوں۔‘‘ یہ حدیث متفق علیہ ہے۔

133 /4. عَنْ جَابِرِ بْنِ سَمُرَةَ رضی الله عنه قَالَ: کَانَ فِي سَاقَي رَسُوْلِ اﷲِ صلی الله عليه واله وسلم حُمُوْشَةٌ. رَوَاهُ التِّرْمِذِيُّ وَأَحْمَدُ وَابْنُ أَبِي شَيْبَةَ.

وَقَالَ التِّرْمِذِيُّ: هٰذَا حَدِيْثٌ حَسَنٌ صَحِيْحٌ. وَقَالَ الْحَاکِمُ: هٰذَا حَدِيْثٌ صَحِيْحُ الإِسْنَادِ.

4: أخرجه الترمذي في السنن، کتاب المناقب، باب في صفة النبي صلی الله عليه واله وسلم ، 5 /603، الرقم: 3645، وأحمد بن حنبل في المسند، 5 /97، الرقم: 20955، وابن أبي شيبة في المصنف، 6 /328، الرقم: 31806، وأبو يعلی في المسند، 13 /453، الرقم: 7458، والحاکم في المستدرک، 2 /662، الرقم: 4196، والطبراني المعجم الکبير، 2 /244، الرقم: 2024.

’’حضرت جابر بن سمرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی پنڈلیاں مبارک پتلی تھیں۔‘‘

اِس حدیث کو امام ترمذی، احمد اور ابن ابی شیبہ نے روایت کیا ہے۔ امام ترمذی نے فرمایا: یہ حدیث حسن صحیح ہے، امام حاکم نے فرمایا: یہ حدیث صحیح الاسناد ہے۔

Copyrights © 2019 Minhaj-ul-Quran International. All rights reserved