Arba‘in: Virtues of the Holy Prophet (PBUH)

فصل نہم :حضور ﷺ کی علمی و سعت اور مخلوق کے تمام اَحوال سے آگاہ ہونے کا بیان

فَصْلٌ فِي کَوْنِهِ صلی الله علیه وآله وسلم عَالِماً بِجَمِیْعِ أَحْوَالِ الْخَلْقِ بِإِعْلَامِ ﷲِ تَعَالٰی

حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی علمی و سعت اور مخلوق کے تمام اَحوال سے آگاہ ہونے کا بیان

43/1. عَنْ عَمْرِو بْنِ أَخْطَبَ رضی الله عنه قَالَ: صَلَّی بِنَا رَسُوْلُ ﷲِ صلی الله علیه وآله وسلم الْفَجْرَ. وَصَعِدَ الْمِنْبَرَ فَخَطَبَنَا حَتَّی حَضَرَتِ الظُّهْرُ، فَنَزَلَ فَصَلَّی ثُمَّ صَعِدَ الْمِنْبَرَ. فَخَطَبَنَا حَتَّی حَضَرَتِ الْعَصْرُ، ثُمَّ نَزَلَ فَصَلَّی ثُمَّ صَعِدَ الْمِنْبَرَ. فَخَطَبَنَا حَتَّی غَرَبَتِ الشَّمْسُ، فَأَخْبَرَنَا بِمَا کَانَ وَبِمَا هُوَ کَائِنٌ قَالَ: فَأَعْلَمُنَا أَحْفَظُنَا.

رَوَاهُ مُسْلِمٌ وَ التِّرْمِذِيُّ.

أخرجه مسلم في الصحیح، کتاب الفتن وأشراط الساعة، باب إخبار النبي صلی الله علیه وآله وسلم في ما یکون إلی قیام الساعة، 4/2217، الرقم: 2892، والترمذي في السنن، کتاب الفتن، باب ما جاء ما أخبر النبي صلی الله علیه وآله وسلم أصحابه بما هو کائن إلی یوم القیامة، 4/483، الرقم: 2191، وابن حبان في الصحیح، 15/9، الرقم: 6638، والحاکم في المستدرک، 4/533، الرقم: 8498، وأبویعلی في المسند، 12/237، الرقم: 2844، والطبراني في المعجم الکبیر، 17/28، الرقم: 46، والشیبانی في الأحاد والمثانی، 4/199، الرقم: 2183.

’’حضرت عمرو بن اخطب انصاری رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے نماز فجر میں ہماری امامت فرمائی اور منبر پر جلوہ افروز ہوئے اور ہمیں خطاب فرمایا یہاں تک کہ ظہر کا وقت ہوگیا، پھر آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نیچے تشریف لے آئے نماز پڑھائی بعد ازاں پھر منبر پر تشریف فرما ہوئے اور ہمیں خطاب فرمایا حتی کہ عصر کا وقت ہو گیا پھر منبر سے نیچے تشریف لائے اور نماز پڑھائی پھر منبر پر تشریف فرما ہوئے۔ یہاں تک کہ سورج ڈوب گیا پس آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ہمیں ہر اس بات کی خبر دے دی جو جو آج تک وقوع پذیر ہو چکی تھی اور جو قیامت تک ہونے والی تھی۔ حضرت عمرو بن اخطب رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں ہم میں زیادہ جاننے والا وہی ہے جو ہم میں سب سے زیادہ حافظہ والا تھا۔‘‘

اس حدیث کو امام مسلم اور ترمذی نے روایت کیا ہے۔

44/2. عَنْ حُذَیفَةَ رضی الله عنه قَالَ: قَامَ فِیْنَا رَسُوْلُ ﷲِ صلی الله علیه وآله وسلم مَقَامًا مَا تَرَکَ شَیْئًا یَکُوْنُ فِي مَقَامِهِ ذَلِکَ إِلَی قِیَامِ السَّاعَةِ، إِلَّا حَدَّثَ بِهِ حَفِظَهُ مَنْ حَفِظَهُ وَنَسِیَهُ مَنْ نَسِیَهُ.

مُتَّفَقٌ عَلَیْهِ وَ هَذَا لَفْظُ مُسْلِمٍ.

أخرجه البخاري في الصحیح، کتاب القدر، باب وکان أمر ﷲ قدرا مقدورا، 6/2435، الرقم: 6230، ومسلم في الصحیح، کتاب الفتن وأشراط الساعة، باب إخبار النبي صلی الله علیه وآله وسلم في ما یکون إلی قیام الساعة، 4/2217، الرقم:2891، والترمذي مثله عن أبی سعید الخدری رضی الله عنه في السنن، کتاب الفتن، باب ما جاء أخبر النبي صلی الله علیه وآله وسلم أصحابه بما هو کائن إلی یوم القیامة، 4/483، الرقم: 2191، وأبوداود في السنن، کتاب الفتن والملاحم، باب ذکر الفتن ودلائلها، 4/94، الرقم:4240، وأحمد بن حنبل في المسند، 5/385، الرقم: 23322، والبزار في المسند، 7/231، الرقم: 8499، وقال: هَذَا حَدِیْثٌ صَحِیْحٌ، والطبراني مثله عن أبي سعید الخدري رضی الله عنه في مسند الشامیین، 2/247، الرقم: 1278، والخطیب التبریزي في مشکوٰة المصابیح، 2/278، الرقم: 5379.

’’حضرت حذیفہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضورنبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ہمارے درمیان ایک مقام پر کھڑے ہو کر خطاب فرمایا: آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اپنے اس دن کھڑے ہونے سے لے کر قیامت تک کی کوئی ایسی چیز نہ چھوڑی، جس کو آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے بیان نہ فرما دیا ہو۔ جس نے اسے یاد رکھا یاد رکھا اورجو اسے بھول گیا سو بھول گیا۔‘‘

یہ حدیث متفق علیہ ہے جب کہ مذکورہ الفاظ مسلم کے ہیں۔

Copyrights © 2019 Minhaj-ul-Quran International. All rights reserved