Arba‘in: Virtues of the Holy Prophet (PBUH)

فصل دہم :حضور ﷺ کے دست اقدس میں تمام خزانوں کی چابیاں دیے جانے کا بیان

فَصْلٌ فِي کَوْنِ صلی الله علیه وآله وسلم مَفَاتِیْحِ خَزَائِنِ الْأَرْضِ بِیَدِهِ

حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے دست اقدس میں تمام خزانوں کی چابیاں دیے جانے کا بیان

45/1. عَنْ أَبِي هُرَیْرَةَ رضی الله عنه أَنَّ رَسُوْلَ ﷲِ صلی الله علیه وآله وسلم قَالَ: بُعِثْتُ بِجَوَامِعِ الْکَلِمِ، وَنُصِرْتُ بِالرُّعْبِ، وَبَیْنَا أَنَا نَائِمٌ رَأَیْتُنِي أُتِیْتُ بِمَفَاتِیْحِ خَزَائِنِ الْأَرْضِ فَوُضِعَتْ فِي یَدِي.

مُتَّفَقٌ عَلَیْهِ.

أخرجه البخاري في الصحیح، کتاب الاعتصام بالکتاب والسنة، باب قول النبي صلی الله علیه وآله وسلم: بعثت بجوامع الکلم، 6/2654، الرقم: 6845، وفي کتاب الجهاد، باب قول النبي صلی الله علیه وآله وسلم: نُصِرْتُ بِالرُّعْبِ مسیرة شهر، 3/1087، الرقم: 2815، وفي کتاب التعبیر، باب المفاتیح في الید، 6/2573، الرقم: 6611، و مسلم في الصحیح، کتاب المساجد و مواضع الصلاة، 1/371، الرقم: 523، و النسائی في السنن، کتاب الجهاد، باب وجوب الجهاد، 6 /3-4، الرقم: 3087-3089، وفي السنن الکبری، 3/3، الرقم: 4295، وأحمد بن حنبل في المسند، 2/ 264-455، الرقم: 7575-9867، و ابن حبان في الصحیح، 14/277، الرقم: 6363.

’’حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: میں جامع کلمات کے ساتھ مبعوث کیا گیا ہوں اور رعب کے ساتھ میری مدد کی گئی ہے اور جب میں سویا ہوا تھا اس وقت میں نے خود کو دیکھا کہ زمین کے خزانوں کی کنجیاں میرے لیے لائی گئیں اور میرے ہاتھ میں تھما دی گئیں۔‘‘

یہ حدیث متفق علیہ ہے۔

Copyrights © 2019 Minhaj-ul-Quran International. All rights reserved